مکتبہ احمدیہ فہرست مضامین

فہرست مضامین تحقیق عارفانہ

شمار مضمون صفحه
1 پیش لفظ  
  تحقیق عارفانہ کی افادی حیثیت 1
2 ضروری گذارش  
  حرف محرمانہ کی حیثیت 3

باب اول

3 ختم نبوت کی حقیقت 5
4 تمام مسلمان علماء کا ایک نبی کی آمد پر اتفاق 7
5 مسلمان کا ایک گروہ میت کے بروزی نزول کا قائل چلا آیا ہے 8
6 برق صاحب کا ہمارے خط کے جواب میں نزول مسیح کے بارہ میں شک کا اظہار 9
7 وفات مسیح علیہ السلام اور برق صاحب کا فرض 11
8 بزرگان امت کے اقوال میں امکان نبوت غیر تشریعی 15
9 برق صاحب کے ایک جدید نظر یہ کہ کوئی نبی نئی شریعت نہیں لایا کا ابطال 18
10 برق صاحب کے ایک دوسرے نظر یہ کہ ہم کسی نبی کو غیر تشریعی فرض کر ہی نہیں سکتے کا ابطال 22
11 نبوت اور نبی کے لغوی معنی کی قرآن سے تائید 23
12 تشریع امر عارض ہے (یعنی ہر نبی کے لئے شریعت جدیده لانا ضروری نہیں) 25
13 حضرت مسیح موعود علیہ السلام کی طرف سے آیت خاتم النبیین کی تفسیر کہ آپ کی توجہ روحانی نبی تراش ہے پر برق صاحب کااعتراض اور اس کا جواب 25
14 مولانا محمد قاسم صاحب نانوتوی کی غیر متعلق آیت خاتم النبیین 28
15 برق صاحب کی دوسری علمی لغزش 30
16 ختم نبوت کے لغوی معنی 33
17 خاتم کے معنی از روئے حدیث نبوی 36
18 قرآن کریم سے امکان نزول وحی و امکان نبوت کا ثبوت 38
19 خاتم النبیین کی تفسیر حدیث میں 47
20 حدیث لو عاش ابراہیم کان صديقانبیا کی توثیق اور تشریح 48
21 حضرت محی الدین ابن عربی کے نزدیک انقطاع نبوت والی احادیث کی تشریح 49
22 حدیث لو كان بعدی نبی لکان عمر کے ضعف کا ثبوت اوربصورت تسلیم صحیح معنے 51
23 امکان نبوت کے بارہ میں تین اور حد یثیں 53
24 انقطاع نبوت پر برق صاحب کی پیش کردہ حدیثوں کی صحیح تشریح 57
25 خاتم النبیین کاالف لام۔ 72
26 اعتدال کی راہ 73
27 خاتم کا استعمال حضرت مسیح موعودؑ کی تحریرات میں اور برق صاحب کے اعتراض کا جواب 74
28 ایک بروز محمدی سے متعلقہ عبارت اور برق صاحب کے اس اعتراض کا جواب کہ اس کی رو سے امت محمدیہ میں ایک سے زیادہ نبی کسی صورت میں نہیں آسکتے 79
29 برق صاحب کا خطبہ الہامیہ کی ایک ادھوری عبارت پیش کر کے ایک مغالطہ اور اس کا جواب۔ 81
30 برق صاحب کے اس اعتراض کا جواب کہ حضور علیہ السلام کی توجہ سے نبی پیدا ہو سکتے ہیں تو صحابہ کرام میں سے کوئی شخص منصب نبوت پر فائز کیوں نہ ہو سکا 87
31 برق صاحب کے اس اعتراض کا جواب کہ خاتم النبیین سے مرادنبی تراش مہرلی جائے تو کم از کم تین نبی آنے چاہیں 88
32 برق صاحب کی تحریروں میں تناقض۔ 89
33 ختم نبوت کی تشر یح کے لحاظ سے انکار نبوت اور اقرار نبوت کے حوالہ جات کا حل اور اس امر کا ثبوت کہ تدریجی انکشاف قابل اعتراض نہیں 90
34 برق صاحب کے اس اعتراض کا جواب کہ جو دیوار مسیح کی راہ میں حائل تھی وہ مسیح موعود کو بھی آنے سے روک سکتی تھی 104
35 کشتی نوح صفحہ 13 کی عبارت سے متعلق مغالطہ کاجواب 108
36 ایک حوالہ میں برق صاحب کی تحریف اور حوالہ کا حل 109
37 مسئلہ نبوت مسیح موعود کے بارہ میں حضرت اقدس کی عبارتوں کے متعلق رفع اختلاف کی تین صورتیں اور ان پر برق صاحب کے اعتراضات مع جوابات۔ 113
38 رفع اختلاف کی صورت اول پر برق صاحب کے سات سوالوں کے جوابات 115
39 رفع اختلاف کی دوسری صورت پر برق صاحب کی تین باتوں کا جواب۔ 123
40 نبوت کی تقسیم از روئے قرآن اور اس امر کا ثبوت کہ انجیل کوئی شریعت کی کتاب نہ تھی اور اس امر کارد کہ حضرت مرزا صاحب تشریعی نبوت کے مدعی تھے۔ 124
41 حضرت خلیفۃ المسیح الثانی کا یہ عقیدہ ہے کہ کوئی شخص آنحضر تﷺ سے نہیں بڑھے گا اور اس بارہ میں برق صاحب کے مغالطہ کارد 429
42 برق صاحب کے خلاف اجماع نظریہ کی تردید کہ آدم کے سواسب نبی امتی ہیں 132
43 حضرت مسیح موعود کا دعوی تشر یعی نبی کا نہیں اس بارہ میں برق صاحب کے مغالطہ کی تردید اور اربعین کی ایک عبادت کی تشر یح 134
44 رفع اختلاف کی تیسری صورت پر برق صاحب کے اعتراضات کے جوابات۔ 138

باب دوم

45 حرف محرمانہ کے دوسرے باب متعلق مسیح موعود علیہ السلام کا جواب 145
46 احادیث کے متعلق حضرت مسیح موعودؑکا مسلک اوربرق صاحب کی مفتریات کارد 146
47 مسیح موعود کا ذکر قرآن شریف میں 151
48 برق صاحب کا حضرت اقدس پر مستقل رسول ہونے کابہتان 153
49 برق صاحب کی ایک الجھن کا حل 153
50 برق صاحب کے ایک غیر منطقی اعتراض کا جواب۔ 156

باب سوم

51 مسیح و مثیل مسیح 159
52 حضرت اقدس پر حضرت عیسی علیہ السلام کی ہتک کے الزامات 162
53 قرآن کا عیسٰیؑ انجیل کے یسوع سے الگ ہستی نہ تھا تو الزامی جواب کیوں؟ 169

باب چہارم

54 تاریخ بعثت 180
55 تاریخ بعثت کے متعلق مغالطات کے جوابات۔ 180

باب پنجم

56 دلائل نبوت 190
57 آیت من يطع الله والرسول فاولئك مع الذين انعم الله عليهم من النبین سے امکان نبوت کا ثبوت 190
58 معیار صداقت آیت ولو تقول علينا بعض الأقاويل لاخذنا منہ باليمين ثم لقطعنامنہ الوتین کے متعلق برق صاحب کی غلط اختراع 195
59 مفتری علی اللہ کے متعلق برق صاحب کی پیش کردہ آیات کی اصل حقیقت 201
60 حضرت اقدس کی عیسی علیہ السلام سے مماثلت 204
61 مماثلت پربرق صاحب کی تنقید کی جزواول کا جواب۔ 207
62 جزو دوم کا جواب 210
63 جزو سوم کاجواب 216
64 جزو چہارم کا جواب 224
65 جزو پنجم کا جواب۔ 227

باب ششم و هفتم

66 الدجال و جہاد 230
67 برق صاحب کی تلبیس انگریزی حکومت کو دجال اکبر قرار دینے کے متعلق 240
68 انگریزوں کی غلامی کے درس کے الزام کارد 244
69 مولوی محمد حسین بٹالوی کی حکومت میں جھوٹی مخبری 246
70 خود کاشتہ کی حقیقت 249
71 بعض علماء کی حکومت کے خلاف تشددانہ پالیسی کی دوباره ناکامی 254
72 انگریزوں کی سداغلامی کے الزام کارد 255
73 بعض حوالہ جات کی تشر یح 260
74 قانون۔ د کھائی۔ کے بارہ میں حضرت اقدس پر ایک حملے کارد و متعہ کی حیثیت اسلام میں اور برق صاحب کا حضرت اقدس پر ایک افتراء 263
75 تحفہ قیصریہ وستارہ قیصریہ کے متعلق اعتراضات کی تردید۔ 269
76 برق صاحب کی خطرناک تحریف۔ 270
77 دجال کی شوکت کم کرنے اور پادریوں کی شکست کے متعلق دو سوالوں کا جواب۔ 272
78 پنجاب میں عیسائیوں کی تعداد کی بناء پر حضرت اقدس سے استھزاء کاجواب۔ 273
79 مباحثات میں حکمت عملی 278
80 حکومت کابل کی وزارت کے اعلان میں برق صاحب کی تحریف۔ 278
81 ترکوں کی شکست پر اعتراض کا جواب 279
82 مبلغ روس کے رویہ پر اعتراض کا جواب 281
83 جماعت احمدیہ کی طرف سے مسلم مفاد کی حفاظت 283
84 باب ہفتم کے آخری اعتراض کارد۔ 284

باب ہشتم

85 صداقت کے معیار 289
86 حضرت اقدس کی دعاؤں کی عدم قبولیت کا اعتراض 289
87 مولوی ثناء اللہ صاحب امرتسری کے ساتھ آخری فیصلہ کی حقیقت 290
88 میر ناصر نواب صاحب کی روایت کی حقیقت 300
89 ڈاکٹر عبد الحکیم خان کی پیشگوئی کی حقیقت 301
90 حضرت اقدس کے فہم قرآن کے متعلق اعتراضات و جوابات 307
91 نشانات کی تعداد کے بیان میں تضاد کے اعتراض کا جواب۔ 335
92 پیشگوئیوں کے اصول 338
93 مسیح موعود کی پیشگوئیوں کے متعلق ایک غیر جانبدار عالم کی رائے اور اس کے قلم سے سترہ پیشگوئیوں کا بیان 342
94 برق صاحب کے دس الہامی پیشگوئیوں پر اعتراضات کے جوابات 355
95 نمبر1۔ پیشنگوئی متعلق محمدی بیگم صاحبہ 355
96 نمبر 2۔ پیشگوئی متعلق ڈپٹی عبد الله آتھم۔ 399
97 نمبر 3۔ پسر موعود ( مصلح موعود کے متعلق پیشگوئی) 427
98 نمبر 4۔ طاعون کی پیشنگوئی۔ 449
99 نمبر 5۔ الہام عمر 469
100 نمبر6۔ امراض خبیثہ سے حفاظت کاوعدہ 479
101 نمبر7۔ الہام متعلق ثلج ۔ 480
102 نمبر8۔ بشیر الدولہ۔ عالم کباب 488
103 نمبر 9 ۔ کنواری اور بیوہ 491
104 نمبر 10۔ بعض بابرکت عور تیں 492
105 برق صاحب کابعض پیشگوئیوں کے پورا ہونے کا اعتراف۔ 493

باب نہم

106 الہامات پر اعتراضات کے جوابات۔ 496
107 بعض الہامات پر مہمل ہونے کے اعتراض کا جواب۔ 523

باب دہم

108 حضرت اقدس کی ” وسعت علم “ پر باره اعتراضات کے جوابات 536

باب یازدہم

109 حضرت اقدس کی ار دودانی پر نکتہ چینی کے جوابات 557
110 بعض الہامات پر ادبی اعتراضات کے جوابات 608
111 خطبہ الہامیہ کی بعض عربی عبارتوں پر ادبی اعتراضات کے جوابات 625
112 عربی قصیده مشمولہ خطبہ الہامیہ کے اشعار پر نکتہ چینی کا جواب 644
113 قصيده اعجاز یہ مندر جہ (اعجاز احمدی) کی معجزانہ حیثیت 648
114 قصیدہ اعجازیہ کے پانچ اشعار پر ادبی نکتہ چینیوں کا جواب 650
115 اعجازالمسیح پرپانچ اعتراضات کے جوابات 654
116 قرآن شریف کی آیات پر عیسائیوں کی نکتہ چینی کا نمونہ۔ 673

باب دواز دہم

117 برق صاحب کے آخری حملہ مخالفوں کے متعلق سخت کلامی کارد 679

خاتمہ

118 کتاب کا مختصر تر یں خلاصہ وخاتمہ 694